کوئی موسم بھی رہائی نہیں دیتا ہم کو

کوئی موسم بھی رہائی نہیں دیتا ہم کو

رُت بدلتی ہے تو زنجیر بدل جاتی ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ