اردوئے معلیٰ

Search

کوئی گل باقی رہے گا، نے چمن رہ جائے گا

پر رسول اللہ کا دین حسن رہ جائے گا

 

ہم صفیرو باغ میں ہے کوئی دم کا چہچہا

بلبلیں اڑ جائیں گی سونا چمن رہ جائے گا

 

اطلس و کمخواب کی پوشاک پر نازاں نہ ہو تم

اس تنِ بے جان پر خاکی کفن رہ جائے گا

 

نامِ شاہانِ جہاں مٹ جائیں گے لیکن یہاں

حشر تک نام و نشانِ پنجتن رہ جائے گا

 

جو پڑھے گا صاحبِ لولاک کے اوپر درود

آگ سے محفوظ اس کا تن بدن رہ جائے گا

 

سب فنا ہو جائیں گے کافی ،ولیکن حشر تک

نعتِ حضرت کا زبانوں پرسخن رہ جائے گا​

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ