کہیں بے بسی سی دھڑک رہی ، میری بائیں آنکھ پھڑک رہی

کہیں بے بسی سی دھڑک رہی ، میری بائیں آنکھ پھڑک رہی

کوئی سانحہ کوئی حادثہ مرا منتظر تو نہیں کہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ