اردوئے معلیٰ

Search

کیا بتاؤں کہ قلم پر مرے کیا کیا اترا

ہاں زباں پر مری، نعتوں کا وظیفہ اترا

 

کس طرح عرض کروں شانِ رسولِ اکرم

ذہنِ افکار پہ مدحت کا سلیقہ اترا

 

ایک دن پھر مجھے طیبہ سے بلاوا آئے

سانس در سانس یہی ایک عریضہ اترا

 

لفظ جوڑے ہیں جو الفت سے ثنا کی خاطر

ان کی جانب سے بھی شفقت کا صحیفہ اترا

 

اسوۂ پاکِ نبی جس کے عمل کا محور

زندگی جینے کا بس اس پہ قرینہ اترا

 

آپ کے در سے شفا سب کو ملی ہے زاہدؔ

دہر میں آپ سا کوئی نہ مسیحا اترا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ