اردوئے معلیٰ

گردِ ما ننشست جز در دامنِ زلفِ بتاں

ہر کجا بینی پریشاں با پریشاں آشناست

 

ہماری (پریشان) خاک، محبوب لوگوں کی

زلفِ پریشاں کے سوا اور کہیں نہ بیٹھی

تُو جہاں کہیں بھی دیکھ لے تجھے علم ہو جائے

گا کہ ایک پریشان دوسرے پریشان کا آشنا ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات