اردوئے معلیٰ

گزر گئے غمِ ہجراں کے سینکڑوں موسم

گزر گئے غمِ ہجراں کے سینکڑوں موسم

تمہارے وصل کے لمحے نہ میری جاں گزرے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ