اردوئے معلیٰ

Search

ہر ایک آنکھ میں بستے نہیں ہیں ہم لوگو

اب اس قدر بھی تو سستے نہیں ہیں ہم لوگو

 

کسی کو شک ہے تو رکھے وہ آستیں میں ہمیں

کہ دودھ پی کے تو ڈستے نہیں ہیں ہم لوگو

 

نکل پڑے ہیں ، کہیں بھی ہمیں نہیں جانا

چلو نہ ساتھ کہ رستے نہیں ہیں ہم لوگو

 

ہے دنیا ایک تماشہ ، کسی مداری کا

یہ اور بات کہ ہنستے نہیں ہیں ہم لوگو

 

کوئی تو وصف زمانے سے ہے جدا اُس میں

بلا جواز برستے نہیں ہیں ہم لوگو

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ