اردوئے معلیٰ

Search

ہر لمحہ خیالوں میں مدینے کی فضا ہے

جینے کا سہارا مِرے آقا کی ثنا ہے

 

ہونٹوں پہ سجائی ہیں مناجات کی کلیاں

آنکھوں میں بسی گنبدِ خضرٰی کی ضیا ہے

 

مدحت میں جو بُنتی ہوں مَیں اشعار کی لڑیاں

سب کچھ یہ مِرے شاہِ دوعالم کی عطا ہے

 

پھیلی ہے گُلابوں کی مہک گوشۂ دل میں

سانسوں میں رواں ذکرِ نبی اور خدا ہے

 

کرتی ہوں میں پیش آپ کو صلوات کے تحفے

یہ کام رہے جاری مرے دل کی دعا ہے

 

بھر دیتے ہیں دامن کو حضور اپنے کرم سے

دینے پہ وہ قادر ہیں ، سخا اُن کی جُدا ہے

 

ہے نازؔ کی حسرت کہ ملے اِس کو وُہ رستہ

جس رستے پہ سرکار کا نقشِ کفِ پا ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ