اردوئے معلیٰ

ہمیں سعادتِ من بس کہ چوں مرا بینی

بخاطرت گذرد کایں گدا اسیرِ منست

 

میری یہی سعادت میرے لیے بہت ہے کہ

تُو جب کبھی مجھے دیکھتا ہے تو تیرے دل

میں یہ خیال آتا ہے کہ یہ فقیر میرا ہی اسیر ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات