اردوئے معلیٰ

ہم اپنی گرمیِ سوزِ دروں سے چیخ اٹھے

خوشا کہ مستی فیضِ جنوں سے چیخ اٹھے

یہ ناز طبع بلند بہ زعم خود نگہی

زمانہ سازی دنیائے دوں سے چیخ آٹھے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات