ہم سے عاصی لوگوں کو آسرا محمد کا

ہم سے عاصی لوگوں کو آسرا محمد کا

واسطے سہارے کے در کھلا محمد کا

 

سلسلہ کرم کا وہی مدعا حرم کا وہی

ہر ملولِ عالم کو آسرا محمد کا

 

ہم کو ڈر ہے کاہے کا اور ملال کا ہے کا

ورد اک لساں کے واسطے ہے سدا محمد کا

 

ہر کلام اعلیٰ ہے ہر کلام اکرم ہے

اس لئے کہا کھل کر دل ہوا محمد کا

 

اُسرہء محمد کے لوگ مالکِ عالم

ہے رہا مہک ہر دم گُل کدہ محمد کا

 

مسئلوں کا حل ہے وہی اور وہی مکمل ہے

درد کا مداوا ہے واسطہ محمد کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ