اردوئے معلیٰ

Search

ہم ہیں ہندو پر محبت ہے شہِ ابرار سے

اس لئے ڈرتے نہیں ہم نرگ سے یا نار سے

 

تو نے مانوتا کی رکھ لی آبرو مولا حسینؑ

کس کو ہے انکار تیرے اس مہا اُپکار سے

 

ہم تو ہیں پاپی مگر غم خوار ہیں شبیرؑ کے

دھوئیں گے ہم پاپ اپنے آنسوؤں کی دھار سے

 

ناز ہے ہم کو کہ ہم بھی شہ کے ماتم دار ہیں

ہم تو جنت لے ہی لیں گے خلد کے سردار سے

 

آج بھی شبیرؑ کے روضے سے آتی ہے صدا

ظلم کا سر کاٹ لو یوں صبر کی تلوار سے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ