اردوئے معلیٰ

(کوئٹہ میں برفباری کی تصویر کا دوسرا رُخ )

 

ہے برف کے اِس عکس میں سرشاری و مستی

لیکن ہے اِسی عکس کا اِک دوسرا رخ بھی

 

تصویر کے اس رُخ میں ہے ژولیدہ جوانی

ہے ہوش رُبا صبر طلب ،جس کی کہانی

 

گھنگھور گھٹائیں ہیں دھواں دھار دُھندلکا

یَخ بستہ ہواؤں سے ہے اِک حشر سا برپا

 

آبادیاں مانندِ بیاباں ہیں لَق و دَق

آتا بھی ہے ذی روح نظر کوئی تو منہ فق

 

حرکت ہے نہ ہلچل، نہ حرارت، نہ جنوں ہے

پُر ہَول فضا زیست گرفتارِ فسوں ہے

 

سنسان گلی کوچے ہیں اجڑے ہوئے بازار

ہیں برف میں مدفون چمن سبزہ و گلزار

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات