اردوئے معلیٰ

ہوا جو ظلم تو خاموش تھا ہر اک منظر

ہوا جو ظلم تو خاموش تھا ہر اک منظر

کہاں کسی کے کُھلے لب ، کوئی کہاں بولا

تندور میں کبھی زندہ بدن جلائے گئے

زباں کوئی نہ کُھلی تھی مگر دھواں بولا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ