اردوئے معلیٰ

Search

ہیں مدینے میں چھما چھم رحمتوں کی بارشیں

ہو رہی ہیں خوب پیہم رحمتوں کی بارشیں

 

تذکرہ جس جا نہیں ہے سیّدِ کونین کا

اُس جگہ ہوتی ہیں کم کم رحمتوں کی بارشیں

 

صبح و شام آئیں ملائک حاضری کے واسطے

کیوں نہ ہوں طیبہ میں ہر دم رحمتوں کی بارشیں

 

برملا آجائے جس کے لب پہ نامِ مصطفیٰ

اُس پہ برسیں کیوں نہ یکدم رحمتوں کی بارشیں

 

آنے لگتی ہیں درودوں کی صدائیں دم بہ دم

چھیڑ دیتی ہیں جو سرگم رحمتوں کی بارشیں

 

نعتیہ اشعار سے کرتے ہیں استقبال ہم

ہیں ہمیں ایسی مقدم رحمتوں کی بارشیں

 

قطرے قطرے میں ثنائے مصطفیٰ کی ہے مہک

اس طرح سے ہیں مکرم رحمتوں کی بارشیں

 

فیض پاتا ہے برابر ذرّہ ذرّہ ہر جگہ

رب نے یوں کی ہیں منظم رحمتوں کی بارشیں

 

ہے یہ خاکیؔ پر کرم اللہ کے محبوب کا

نعت کی صورت بہر دم رحمتوں کی بارشیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ