اردوئے معلیٰ

ہے آرزُو کہ اُٹھوں اور سُکون پا جاؤں

نبی کی نعت کہوں اور سُکون پا جاؤں

 

نبی کا راستہ یارو! ہدایتوں والا

اِسی پہ میں بھی چلوں اور سُکون پا جاؤں

 

حضور شہرِ مدینہ بہشت میرے لیے

ہمیشہ اس میں رہوں اور سُکون پا جاؤں

 

نبی کے نام سے پہچانا جاؤں دُنیا میں

جیوں تو ایسے جیوں اور سُکون پا جاؤں

 

بروزِ حشر نبی کے ہی دستِ اقدس سے

مئے نجات پیؤں اور سُکون پا جاؤں

 

نبی کی قُربتوں میں بیٹھ کر رضاؔ میں بھی

دُرودِ پاک پڑھوں اور سُکون پا جاؤں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات