اردوئے معلیٰ

Search

ہے دعا میری مدینے کا سفر ہو جائے

ہجر کی رات کٹے اور سحر ہو جائے

 

کاش آ جائیں وہ گھڑیاں کہ بلا لیں آقا

زندگی آپ کی چوکھٹ پہ بسر ہو جائے

 

فرطِ جذبات سے چوموں وہ سنہری جالی

میری قسمت میں بھی یہ لمحہ اگر ہو جائے

 

جس گھڑی پیش کروں ان کو درود اور سلام

اس گھڑی ناز پہ ان کی بھی نظر ہو جائے

 

عمر بھر کرتی رہوں شاہِ دو عالم کی ثنا

میرا ہر شعر درِ شہ پہ امر ہو جائے

 

ہے تمنا یہ کہ مقبول ہو مدحت جو کروں

میرے اشعار میں اتنا تو اثر ہو جائے

 

ناز ہو جائے غلامی کی جو نسبت اُن سے

سجدۂ شکر کے قابل مرا سر ہو جائے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ