اردوئے معلیٰ

Search

ہے کسی فردِ بشر کو کب یہ حاصل مقدرت

کر سکے ختمِ نبوت کی وہ پوری محمدت

 

وہ ہے سلطانِ دو عالم وہ ہے عالی مرتبت

ہے حبیب اللہ بھی ظاہر ہے اس کی فوقیت

 

ہو چکا تھا اشرف المخلوق یہ حیواں صفت

آپ ہی نے کی ہے آ کر اس کی قلبِ ماہیت

 

مرحمت کی اہلِ عالم کو کتابِ معرفت

ایک اک بتلا دیا کارِ ثواب و معصیت

 

دن میں پند و موعظت شب کو دعائے مغفرت

اپنے ہر اک امتی پر اس کے احساں ان گنت

 

از ہمہ پہلو مکمل سیرتِ ختم الرسل

دینِ حق اس کا ہے کامل بے گماں از ہر جہت

 

فقر کی چادر کو پہنا اپنی مرضی سے مگر

اس کے آگے گرد ہے شاہوں کی شان و تمکنت

 

خالقِ ارض و سما کا وہ ہے پیارا اس قدر

جس کے دل میں جس قدر اس ذات سے ہے انسیت

 

ہیں نمونہ دین و ایماں کا قیامِ حشر تک

اس کے وہ ساتھی رہے جو اس کے زیرِ تربیت

 

آپ ہی اٹھیں گے لوگوں کی شفاعت کے لئے

حشر میں سب انبیاء جب پیش کر دیں معذرت

 

اے نظرؔ اسرا کی شب نے تو یہ ثابت کر دیا

ہے وہی اک سرفرازِ انتہائے منزلت

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ