اردوئے معلیٰ

یامصطفی! خدارا اذنِ حضوری دیجے

رحمت کا ہو اشارہ اذنِ حضوری دیجے

 

میری بھی ہے تمنا میں بھی مدینہ دیکھوں

ہو جائے کوئی چارہ اذنِ حضوری دیجے

 

اللہ کی قسم اک میرا تو اس جہاں میں

ہیں آپ ہی سہارا اذنِ حضوری دیجے

 

طیبہ کو دیکھنے کی ہر دل میں ہے تمنا

ہر لب پہ ہے یہ نعرہ اذنِ حضوری دیجے

 

گرداب میں سفینہ ہچکولے کھا رہا ہے

دیجے اسے کنارہ اذنِ حضوری دیجے

 

بی فاطمہ کے صدقے ، مولا علی کے صدقے

رکھیئے بھرم خدارا اذنِ حضوری دیجے

 

اُس سے سدا رضاؔ کو آقا جی! دور رکھیئے

جس میں ہو کچھ خسارہ اذنِ حضوری دیجے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات