اردوئے معلیٰ

یومِ میلادِ حضرت پہ لاکھوں سلام

اس کی ایک ایک ساعت پہ لاکھوں سلام

 

زلف و رخ قد و قامت پہ لاکھوں سلام

ہاشمی ماہِ طلعت پہ لاکھوں سلام

 

اس کی قرآنی سیرت پہ لاکھوں سلام

مظہرِ شانِ قدرت پہ لاکھوں سلام

 

آفتابِ نبوت پہ لاکھوں سلام

ماہِ گردونِ رفعت پہ لاکھوں سلام

 

پیکرِ استقامت پہ لاکھوں سلام

اس ہمالائے ہمت پہ لاکھوں سلام

 

ہادمِ شرک و بدعت پہ لاکھوں سلام

دافعِ کفر و ظلمت پہ لاکھوں سلام

 

نازشِ آدمیت پہ لاکھوں سلام

قلّۂ کوہِ عظمت پہ لاکھوں سلام

 

بحرِ ذخارِ حکمت پہ لاکھوں سلام

منبعِ ہر ہدایت پہ لاکھوں سلام

 

واقفِ ہر حقیقت پہ لاکھوں سلام

کاشفِ رازِ فطرت پہ لاکھوں سلام

 

پیکرِ رحم و شفقت پہ لاکھوں سلام

اس سراپائے رحمت پہ لاکھوں سلام

 

عرشِ اعظم کی زینت پہ لاکھوں سلام

عالمِ کن کی علّت پہ لاکھوں سلام

 

اس کی چشمِ عنایت پہ لاکھوں سلام

اس کی خوئے مروت پہ لاکھوں سلام

 

اس غریقِ عبادت پہ لاکھوں سلام

اس کے اخلاصِ طاعت پہ لاکھوں سلام

 

جس کو تسلیم کرتے ہی سب کو بنے

اس قیادت سیادت پہ لاکھوں سلام

 

جس کے حق میں سراجاً منیرا کہا

اس چراغِ نبوت پہ لاکھوں سلام

 

راہِ روشن صدا جو دکھاتی رہے

بے نظیر اس شریعت پہ لاکھوں سلام

 

تا قیامِ قیامت جو محفوظ ہے

اس کتابِ پُر عظمت پہ لاکھوں سلام

 

جس پہ سب اہلِ فن آج تک سر دھنیں

اس فصاحت بلاغت پہ لاکھوں سلام

 

جو نگاہِ عدو میں بھی ہے معتبر

اس صداقت امانت پہ لاکھوں سلام

 

صحنِ اقصیٰ میں سب انبیاء مقتدی

اس کی طرفہ امامت پہ لاکھوں سلام

 

فتحِ مکہ کے دن سب کو جو بخش دے

اس مجسم شرافت پہ لاکھوں سلام

 

جو حضورِ خدا میں سفارش کرے

اس طرفدارِ امت پہ لاکھوں سلام

 

آؤ آؤ نظرؔ مل کے سب ہم پڑھیں

ساقی جامِ وحدت پہ لاکھوں سلام

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات