اردوئے معلیٰ

Search

یکتَا بہ فضِیلت ہیں ہر اَبرار سے پہلے

ہے بعد میں ہی کوئی ، نہ سرکار سے پہلے

 

مدحَت کے ہر اک لفط میں تعظیم ہے کامِل

اور سجدے میں سب حَرف ہیں اِظہار سے پہلے

 

گنبد کو نظَر چومے گی روضے کی حدوں تک

گر ہوش رہا ، کُوچہ و بازار سے پہلے

 

یہ پیڑ نبّوت کا حِسیں اَیسا کہاں تھا

اِس اونچی ہری شاخِ ثمر بار سے پہلے

 

ہو جاتا ہے صَد برگ ، تری یاد میں آنسُو

کِھلتا ہُوا تابانیءِ رخسار سے پہلے

 

اب اُس کے سہارے مَیں پہنچ جاؤں گا دَر تک

اک نُور سا جو پھَیلا ہے دِیوار سے پہلے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ