یہی ارشاد ہے ربّ العلیٰ کا

یہی ارشاد ہے ربّ العلیٰ کا

یہی مسلک حبیبِ کبریاؐ کا

کرے انسان انساں سے محبت

ہے یہ منشور انساں کی بقا کا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

یہاں بھی تو وہاں بھی تو زمیں تیری فلک تیرا
میں مسافر ہوں رہنما تُو ہے
تجھ کو روا تکبّر ، تجھ کو ہی کبریائی
میرے ہر دم میں ترے دم سے بڑا دم خم ہے
خدا کا گھر درخشاں، ضو فشاں ہے
فرشتہ تو نہیں انسان ہوں میں
کرم فرما خدا کی ذاتِ باری
مُنور ہر زماں نور خدا سے
جلال کبریا کی مظہر و عکاس ہے ساری خدائی
نہیں ہے مہرباں کوئی خدا سا