’’یہ آسمان کے تارے، یہ نرگسِ شہلا‘‘

 

’’یہ آسمان کے تارے، یہ نرگسِ شہلا‘‘

گلاب و موگرا، جوہی، چنبیلی اور چمپا

ترے ہی دم سے ہے پھیلی بہار آنکھوں میں

’’ترا ہی جلوا ہے ان بے شمار آنکھوں میں ‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ