یہ مسئلہ میں اٹھاؤں گا خواب میں کسی دن

یہ مسئلہ میں اٹھاؤں گا خواب میں کسی دن

تری وجہ سے مری نیند میں تعطل ہے

تُو آ گیا ہے تو کر تھوڑا انتظار ابھی

کہ میری خود سے ملاقات بھی معطل ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

بینائی کے طلسم سے آگے بھی دیکھیے
کرم کا سائباں سر پر ہے میرے
خدا کی ذات کا فضل و کرم ہے
خدا کے گھر سے گرچہ دُور ہوں میں
خدا کے حمد گو گلشن چمن ہیں
خدا کی کبریائی ہے نگہ میں
خدا کا ذکر ذکرِ دل کشا ہے
خدا نے جس کو سیدھی راہ دکھائی
خدا اپنوں کا بیگانوں کا رب ہے
خدا موجود ہے قریۂ جاں میں

اشتہارات