اردوئے معلیٰ

Search

یہ میری آبلہ پائی یہ رہ گزر تنہا

سہارا دے گی مجھے آپ کی نظر تنہا

 

تمہاری یاد نہ ہوتی تو مَیں کہاں جاتا

مَیں کیسے کرتا بھلا زندگی بسر تنہا

 

تمہارے در سے نہ ملتی یقین کی دولت

گماں کے دشت میں پھرتا میں بے خبر تنہا

 

تمہارے نقشِ کفِ پا کا عکس دل پہ لیے

ہجومِ کاہکشاں میں رہا قمرؔ تنہا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ