اردوئے معلیٰ

Search

 

دعاؤں کو اثر کی آرزو ہے

درِ خیرالبشر کی آرزو ہے

 

عطا ہو طاقتِ پرواز مجھ کو

یہ اک بے بال وپَر کی آرزو ہے

 

کرے گوھر فشانی اُن کے در پر

یہ میری چشمِ تر کی آرزو ہے

 

سجے طیبہ کی خاکِ محترم سے

یہی لے دے کے سر کی آرزو ہے

 

شفاعت ہو متقدر روزِ محشر

یہ ہر جّن وبشر کی آرزو ہے

 

رہ طیبہ میں بِچھ بِچھ جائیں ہر آن

یہی شمس وقمر کی آرزو ہے

 

نہیں درکار مجھ کو مال و دولت

بس ان سے اک نظر کی آرزو ہے

 

عطا اس کو بھی مدِحَت کا ہنُر ہو

کلیم بے ہنُر کی آرزو ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ