میں ایسا پیڑ ہوں جس کی تمام شاخوں پر

میں ایسا پیڑ ہوں جس کی تمام شاخوں پر

تمہاری یاد کی چڑیا پھدکتی رہتی ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

مانتا ھُوں کہ مُجھے عشق نہیں ھے تُجھ سے
گیا ہے جو بھکاری، جانتے ہو کون تھا یہ ؟
پہنچے نہ وہاں تک یہ دعا مانگ رہا ہوں
کٹ گئی عمر تو سمجھ آیا
شوریدہ بستی میں ایسی آوازوں کی بھیڑ رہی
لے قضا احسان تجھ پر کر چلے
وہ لہجہ ہائے دریائے سخن میں مسلسل
ذرا سی بات پے ہر رسم توڑ آیا تھا
زندگی جبر مسلسل کی طرح کاٹی ہے
مجھے چھوڑ دے میرے حال پر ترا کیا بھروسہ ہے چارہ گر