اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

مری بربادیاں یہ کہہ رہی ہیں

مری بربادیاں یہ کہہ رہی ہیں

ہمیں غم کا سفر اچھا لگا ہے

 

تمہاری یاد اتنے کام کی ہے

مجھے مشکل میں اندازہ ہوا ہے

 

ترے غم کا گھڑا کھودا ہوا تھا

اداسی اب دھکیلے جا رہی ہے

 

تری یادوں بھرا اجڑا قصیدہ

مجھے سننا پڑا ہے موسموں سے

 

تجھے پھر یاد کرنے لگ گیا میں

تری یادوں سے فرصت جب ملی ہے

 

بتاؤ تم منانا جانتے ہو؟

سنو میں روٹھ جانا چاہتا ہوں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

تیری دید چھین کے لے گئی ہے بصیرتیں
غمِ فرقت کا چارہ ہی نہیں ہے
گردشِ ایام میں بکھرا ہوا
میرے چہرے پہ لگے زخم یہ بتلاتے ہیں
تم کیا جانو!
کون باتیں کرے تصویروں سے
کاجل
رُک ہی جاتی کہیں ہَوا، لیکن!
تیرے نام کا ورد پِیا
دل آپﷺ کی خوشبو سے ہے آباد نبیﷺ جی