اردوئے معلیٰ

آپ سے حسن کائنات آپ کہاں کہاں نہیں

آپ کا ذکر نہ ہو جہاں ایسا کوئی جہاں نہیں

 

ایک جاں سرور آگ سلگی ہے میری ذات میں

ہے یہ عجیب ماجرا راکھ نہیں دھواں نہیں

 

جن فیصلوں پہ آپ کی مہر ثبت ہو گئی

اس کے بعد با خدا کوئی بھی این و آں نہیں

 

اوصافِ پاک آپ کے جس سے تمام ہوں بیاں

ایسا کوئی قلم نہیں ایسی کوئی زباں نہیں

 

واعظ کی بات بھی پرکھ اپنے بھی من کی بات سن

جس سر سے اٹھ گئے وہ ہاتھ اس کی کہیں اماں نہیں

 

حضرت بلالؓ دے گئے آس یہ ہم کو فلسفہ

جس کے بنا بھی ہو سحر، ایسی اذاں، اذاں نہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات