اردوئے معلیٰ

اب کہاں جاؤں تڑپتے دل کی یہ خواہش نکال

اے مدینے کی زمیں میری بھی گنجائش نکال

 

اے فضا طیبہ کی میرے گرد حلقہ کھینچ کر

مدتِ عمرِرواں سے عرصۂ گردش نکال

 

بارگاہِ مصطفیٰ میں دل سے یہ آئی صدا

آج کی تاریخ سے تاریخِ پیدائش نکال

 

پیش کر دینا قمرؔ سرمایۂ نعتِ نبی

حشر میں جب حکم ہو گا نامۂ پرُسش نکال

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات