اردوئے معلیٰ

الوداع اے ماہ رمضاں ماہ رحمت الوداع

الوداع اے ماہ رمضاں ماہ رحمت الوداع

تھا ہمارے واسطے تو خیر و برکت الوداع

 

سال کے سارے مہینوں میں بہت افضل ہے تو

خوب ہے رمضان یہ تیری فضیلت الوداع

 

تیرے آنے سے بڑھی تھی رونقیں چاروں طرف

لایا تھا تو ساتھ اپنے رب کی نعمت الوداع

 

سحری کا پر کیف منظر اور افطاری کی دھوم

ہر طرف تھی شمع روشن مثل جنت الوداع

 

مسجدوں میں دھوم تھی ہر سو نمازی کی بہار

پڑھتے تھے ساری نمازیں با جماعت الوداع

 

نیک مومن ہو گئے تھے چھوڑ کر سارے گناہ

پائے تھے تجھ سے سبھی رشد و ہدایت الوداع

 

قید سارے ہو گئے اس ماہ میں شیطان و جن

مل گئی تھی ہم سبھی کو ان سے راحت الوداع

 

نار دوزخ سے رہائی مل گئی اس ماہ میں

اور رب نے اس میں کھولا باب جنت الوداع

 

واسطے تیرے خدا بخشے گا میری سب خطا

اور کریں گے حشر میں آقا شفاعت الوداع

 

یا خدا شاہد کو اگلے سال بھی رمضاں ملے

ہو رہا ہے آہ اب یہ ہم سے رخصت الوداع

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ