اردوئے معلیٰ

Search

الہی ثنا خوانِ سرکار کر دے

عطا مجھ کو مدحت کے اشعار کر دے

 

مرے دل میں روشن رہے نورِ احمد

مرا کاسۂ جاں پُر انوار کر دے

 

کرم ایسا کر میرے سینے پہ یارب

نبی کی محبت کو بیدار کر دے

 

نہیں اور چاہت کوئی میرے مولا

عبادت کا مجھ کو طلب گار کر دے

 

کروں تیری مخلوق کی میں بھی خدمت

غریبوں یتیموں کا غم خوار کر دے

 

میں بن جاؤں اخلاق کا ایک پیکر

تو ایسا حسیں میرا کردار کر دے

 

الٰہی اندھیرے میں ہے زندگانی

تو رحمت سے اپنی ضیا بار کر دے

 

مرے رب کرم کی نظر ناز پر ہو

عطا شاہِ بطحا کا دیدار کر دے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ