اردوئے معلیٰ

Search

امت پہ تری آج کرونا کی وبا ہے

ہو ختم یہ دنیا سے یہی میری دعا ہے

 

محشر کا نہیں خوف رہا مجھ کو ذرا بھی

دیدار وہاں ہو گا نبی کا یہ سنا ہے

 

اے کاش مدینے کی طرف جاؤں میں پھر سے

دل کو جو سکوں دے وہ مدینے کی فضا ہے

 

حاصل ہے مجھے نعتِ نبی کی جو سعادت

کچھ اور نہیں ان کی محبّت کی ضیا ہے

 

کیا شان کرے کوئی بیاں آپ کی آقا

لولاک لما آپ کے سر تاج سجا ہے

 

سرکارِ رسالت کی سخاوت ہے سخاوت

محرومِ عنایت کوئی چھوٹا نہ بڑا ہے

 

زاہدؔ کی زباں تر ہی رہے مدحِ نبی سے

تا عمر یہی ایک دعا ربِ عُلیٰ ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ