اردوئے معلیٰ

Search

ان فضاؤں میں جسد ہے روح کب موجود ہے

دل کو طیبہ کی فضاؤں کی ہے پیہم جستجو

 

روح میری روضۂ اقدس پہ ہے مدحت سرا

کررہا ہے پیش دل میرا وہ حرفِ آرزو

 

جس میں ہے ارضِ مدینہ میں سما جانے کاشوق

جس میں ہجرِ مصطفی کے درد کی ہے گفتگو

 

کاش یہ کیفیّتِ قلب و نظر قائم رہے

تادمِ آخر تمنّا ہو سکے یوں سرخ رُو

 

بار آور ہو شجر یوں آرزوؤں کا عزیزؔ!

دست بستہ میں رہوں ہر لمحہ اُن کے رُوبرو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ