اردوئے معلیٰ

Search

آج بھی ہے مرا ہم سفر آئینہ

مدتوں سے یہ نامعتبر آئینہ

 

کیسا منظر گرا وقت کے ہاتھ سے

میں پڑا ہوں ادھر اور ادھر آئینہ

 

کون نظریں ملائے مرے خواب سے

آئینہ بھی یونہی ، ہاں مگر آئینہ

 

معجزہ ہے یہ سب اک دُر اشک کا

ہے مجھے زرہءِ رہ گزر آئینہ

 

ڈر رہا ہوں بہت اس کی صورت سے میں

ہنس رہا ہے مرے حال پر آئینہ

 

کوئی مجھ سے اسے دور لے جائے اب

کر رہا ہے مجھے دربدر آئینہ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ