اردوئے معلیٰ

آمدِ مرسلِ مرسلاں سے ہوئی

آمدِ مرسلِ مرسلاں سے ہوئی

سارے عالم کے ادراک کو آگہی

 

اہلِ عالم کی دائم دعا کی سعی

اس کی آمد سے معمور ہو کے رہی

 

مہر و علم و عطا کو ہو لاکھوں سلام

مہکی مہکی ہے عالم کی ہر اک گلی

 

وہ ہے رحم و کرم وہ عطا ہی عطا

سارے درد و الم کا مداوا وہی

 

اس کے در سے ہوئی ہر کسی کو عطا

اس کے در سے ہے حاصل کرم ہر گھڑی

 

کالی کملی کا ہم کو ہُوا آسرا

اور کرم کی ردا ہم کو راس آگئی

 

دل ہوئے سارے مسرور مسحور سے

اور معطر ہوئی روح کی ہر کلی

 

آلِ اطہار کا ہے ہُوا آسرا

اس طرح سے رہائی ہے ہم کو ملی

 

ہر کوئی ہادی ، سرور کا سائل ہُوا

ہر کسی کو ملی ہے مدد دائمی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ