اردوئے معلیٰ

’’اک اشارے سے کیا شق ماہِ تاباں آپ نے‘‘

 

’’اک اشارے سے کیا شق ماہِ تاباں آپ نے‘‘

پل میں لوٹایا ہے خورشیدِ درخشاں آپ نے

پتھروں نے دی گواہی اے مرے جانِ جمال

’’مرحبا صد مرحبا صلِ علیٰ شانِ جمال‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ