اردوئے معلیٰ

Search

بزمِ الفاظ میں طیبہ کی مہک جاگ اٹھی

پھول کھلنے لگے غنچوں کہ چٹک جاگ اٹھی

 

ان کا جب نامِ معطر میرے لب پر آیا

دشتِ دل میں میرے سبزے کی لہک جاگ اٹھی

 

یاد کیا آج مجھے صبحِ مدینہ کا خیال

میری بے نور نگاہوں میں چمک جاگ اٹھی

 

فکرِ احمد رضا جس دن سے سخن ساز ہوئی

شعر میں عشق کے لہجے کی کھٹک جاگ اٹھی

 

قافلے جانے لگے شہرِ نبی کو مظہرؔ

دل کے سوئے ہوئے زخموں میں کسک جاگ اٹھی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ