اردوئے معلیٰ

Search

بشر کی تاب کی ہے لکھ سکے حلیہ محمد کا

سراپا نور یزدانی ہے سر تا پا محمد کا

 

ہے نواش ازل خود محو سر تا پا محمد کا

یدِ قدرت سے کچھ ایسا بنا نقشہ محمد کا

 

منادی کی ندا آتی تھی یہ صبح ولادت کو

کہ مخلوقِ خدا میں سب پہ ہے قبضہ محمد کا

 

لگاوؔ شوق سے نعرہ اغثنی یا رسول اللہ

مگر جائز نہیں اطلاق کرنا یا رسول اللہ

 

سوائے لن ترانی حضرت موسیٰ کو کیا ملتا

ازل سے ہو چکا دیدار رب حصہ محمد کا

 

کلام اللہ میں دیکھو ید اللہ فوق ایدیھم

خدائے پاک کا فرمان ہے شجرہ محمد کا

 

مہینوں میں ربیع پاک ہے عیدیں سے برتر

دنوں میں جمعہ سے افضل ہے دو شنبہ محمد کا

 

ریاض خستہ جاں کی یہ دعا ہے رات دن تجھ سے

الٰہی عاقبت محمود ہو صدقہ محمد کا

 

مجھے نیر دم محشر کہیں یہ دیکھ کر سارے

یہ بندہ ہے محمد کا یہ ہے بندہ محمد کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ