اردوئے معلیٰ

بعد ثنائے ربِّ معظَّم، نعتِ نبی ہو جاری پیہم

بعد ثنائے ربِّ معظَّم ، نعتِ نبی ہو جاری پیہم

ذکر نبی ہو لب پر ہر دم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّمْ

 

ساقیِ کوثر صاحبِ قرآں ، شافعِ محشر فخرِ رسولاں

خُلق میں یکتا خَلق میں اعٰظم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

سارے نبیؑ میں آپ کا رتبہ ، سب سے ارفع سب سے اعلیٰ

فضلِ مجسم رحمتِ عالم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

میرے نبی کی شان تو دیکھو ، ہر لمحہ ہر آن تو دیکھو

قول خدا پہ ڈالیں نظر ہم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

عشقِ حقیقی ، عشقِ الٰہی دونوں کے ہیں آپ ہی داعی

مہر و وفا اور عشق کے سنگم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

عشقِ نبی ہی عشق خدا ہے ، شرطِ ایماں شرطِ وفا ہے

قرآں میں یہ ذکر ہے پیہم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

قول و فعل اگر یکساں ہو ، عشقِ نبی کا گر عرفاں ہو

ورد زباں ہو مدّھم مدّھم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

 

قرباں خوشدلؔ شاہ امم پر ، سب کی نظر ہے ان کے کرم پر

محسن انساں ہادی عالم ، صَلَّ اللہ عَلَیْہِ وَ سَلَّم

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ