اردوئے معلیٰ

Search

بیانِ عجز و حروفِ نیازِ خام میں آ

سخن کے اوجِ عقیدت مرے کلام میں آ

 

نمازِ بندۂ عاجز ہے بے نیاز کے نام

جمالِ عشقِ نبی قعدہ و قیام میں آ

 

ہے سانس سانس کو مطلوب ربط و ضبطِ ثنا

عطائے مدحتِ سرکار التزام میں آ

 

اُداس شب کے کُھلے دشت میں ہُوں ترسیدہ

چراغِ یادِ پیمبر مرے خیام میں آ

 

رہُوں تو مدحِ پیمبر میں ہی رہُوں یکسر

متاعِ عمرِ رواں کچھ تو میرے کام میں آ

 

جوازِ دیدۂ مِنت ! بس ایک خواب کی بھیک

نویدِ صبحِ عنایت ! بس ایک شام میں آ

 

چمک اُٹھے مری شامِ سخن میں مہرِ اَتم

نمودِ نعت مرے شعرِ ناتمام میں آ

 

عطائے حرفِ تمنا ترے کمال کی خیر

متاعِ رزقِ عقیدت کفِ غلام میں آ

 

عنایتوں کا ہے یہ عام سلسلہ مقصودؔ

درِ ثنا پہ تُو اب صورتِ مدام میں آ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ