بے بسی کے شہر میں ہم زندگی سے تنگ ہیں

بے بسی کے شہر میں ہم زندگی سے تنگ ہیں

دور رہ، بس دور رہ اے بردباری، شکریہ

مر گئے تو ہو گئے ہیں زینؔ ہم اہلِ ہنر

کر رہا ہے اب جہاں باتیں ہماری شکریہ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ