اردوئے معلیٰ

بے قراری بھی ہے مرے مولا

سوگواری بھی ہے مرے مولا

 

راستے میں رکاوٹیں بھی ہیں

قلب جاری بھی ہے مرے مولا

 

آپ سے عشق پر غرور بھی ہے

خاکساری بھی ہے مرے مولا

 

پیار میں ہے دوانہ پن بھی مگر

برد باری بھی ہے مرے مولا

 

ہے مری ذات خاکِ پا تیری

غم کی ماری بھی ہے مرے مولا

 

خوف تو احترام کا ہے مگر

غم پہ طاری بھی ہے مرے مولا

 

ایک میں ہی نہیں گدا تیرا

دنیا ساری بھی ہے مرے مولا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات