اردوئے معلیٰ

بے چین دل نے جس گھڑی مانگا خدا سے عشق

ایسا کرم ہوا کہ ملا مصطفٰی سے عشق

 

گلشن ہو خار ہو یا جبل ، ریگزار ہو

دل میں بسا ہے ان کی گلی و گدا سے عشق

 

ہر سانس میں مہک ہے معطر ہے وہ فضا

خوشبو کو ہے مدینے کی پیاری ہوا سے عشق

 

بٹتا چلا گیا وہ محمد کے ہاتھ سے

مال و متاع کو رہا ان کی سخا سے عشق

 

ان کے کرم سے ہوتے ہیں اشعار نعت کے

اس واسطے عطا کو ہے ان کی عطا سے عشق

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات