اردوئے معلیٰ

تمہارا نام مصیبت میں جب لیا ہو گا

ہمارا بگڑا ہوا کام بن گیا ہوگا​

 

خدا کا لطف ہوا ہوگا دستگیر ضرور​

جو گرتے گرتے ترا نام لے لیا ہوگا​

 

دکھائی جائے گی محشر میں شانِ محبوبی​

کہ آپ ہی کی خوشی آپ کا کہا ہوگا​

 

کسی کے پاؤں کی بیڑی یہ کاٹتے ہونگے​

کوئی اسیرِ غم اُن کو پکارتا ہوگا​

 

کسی کے پلّہ پہ یہ ہونگے وقتِ وزنِ عمل​

کوئی امید سے مونہہ اُن کا دیکھتا ہوگا​

 

کوئی کہے گا دُہائی ہے یا رسول اللہ​

تو کوئی تھام کے دامن مچل گیا ہوگا​

 

شکستہ پا ہوں مرے حال کی خبر کردو​

کوئی کسی سے یہ رو رو کے کہہ رہا ہوگا​

 

زبان سوکھی دکھا کر کوئی لبِ کوثر​

جنابِ پاک کے قدموں پہ گِر گیا ہوگا​

 

ہزار جان فِدا نرم نرم پاؤں سے​

پکار سن کے اسیروں کی دوڑتا ہوگا​

 

عزیز بچہ کو ماں جس طرح تلاش کرے ​

خدا گواہ یہی حال آپ کا ہوگا​

 

کہیں گے اور نبی اِذھَبُواِلیٰ غَیری​

مرے حضور کے لب پر اَنا لَھَا ہوگا​

 

دعائے امتِ بدکار وردِ لب ہوگی​

خدا کے سامنے سجدہ میں سَر جھکا ہوگا​

 

غلام اُن کی عنایت سے چین میں ہونگے​

عَدو حضور کا آفت میں مبتلا ہوگا​

 

میں اُن کے در کا بھکاری ہوں فضلِ مولیٰ سے​

حسن فقیر کا جنت میں بسترا ہوگا​

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات