اردوئے معلیٰ

تم ستم کرتے رہے اور ہم ستم دیکھا کیے

تم ستم کرتے رہے اور ہم ستم دیکھا کیے

خانماں برباد ہو کے رنج و غم دیکھا کیے

سر ہوئے تیغِ عداوت سے قلم دیکھا کیے

تم نے کیں لاکھوں جفائیں اور ہم دیکھا کیے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ