اردوئے معلیٰ

Search

تم کیا ہر ایک مجھ سے بیزار ہے جہاں میں

عنوانِ بے کسی ہوں دنیا کی داستاں میں

 

سجدے نہیں ہیں ہمدم جھک جھک کے پڑھ رہا ہوں

لکھی ہے میری قسمت اس سنگِ آستاں میں

 

کافر تری زباں ہے قدرت کا شعرِ رنگیں

ورنہ کہاں سے آیا جادو ترے بیاں میں

 

اے حشرؔ ہو مبارک ، ہے آج وصل کی شب

اک چاند ہے بغل میں ، اک چاند آسماں میں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ