اردوئے معلیٰ

تیرا نادان آقا کوئی اور ہے

تیرا نادان آقا کوئی اور ہے

میرا والی و مولا کوئی اور ہے

 

اے طبیبو تمہیں کچھ خبر ہی نہیں

جاؤ میرا مسیحا کوئی اور ہے

 

فکر دنیا کی ہے اور نہ عقبیٰ کی کچھ

مجھ کو زر دینے والا کوئی اور ہے

 

میں فداؔئے نبی اور گدائے نبی

میرے غم کا تو نسخہ کوئی اور ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ