اردوئے معلیٰ

’’تیری سرکار میں لاتا ہے رضاؔ اُس کو شفیع‘‘

 

’’تیری سرکار میں لاتا ہے رضاؔ اُس کو شفیع‘‘

سارے ولیوں میں ہوا مرتبہ ہاں ! جس کا رفیع

پرتوِ پاک ترا، عاشق و شیدا تیرا

’’جو مرا غوث ہے اور لاڈلا بیٹا تیرا‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ