اردوئے معلیٰ

ثبت ماتھے پہ نہیں کیا کوئی بوسہ میرے

اور کیا خاک بتاؤں گا جنوں کا باعث

 

ثانیہ ایک ہی گزرا تھا بظاہر ، لیکن

بن گیا عمر کی بے خواب شبوں کا باعث

 

ثمرہِ سوزِ محبت ہے مری بے چینی

اور کم بخت یہی مجھ کو سکوں کا باعث

 

ثانوی ہے مری تکلیف ، کہ میرا کیا ہے

تو بتا پہلے مجھے اپنے غموں کا باعث

 

ثقل کیا چیز، کشش کیا ہے تو گرنا کیسا

مجھ سے مت پوچھ زمیں بوس پروں کا باعث

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات